مناسك حج

مناسك حج0%

مناسك حج مؤلف:
زمرہ جات: احکام فقہی اور توضیح المسائل
صفحے: 217

مناسك حج

مؤلف: آیت اللہ العظميٰ سید علي خامنہ اي حفظہ اللہ
زمرہ جات:

صفحے: 217
مشاہدے: 6890
ڈاؤنلوڈ: 378

تبصرے:

مناسك حج
کتاب کے اندر تلاش کریں
  • ابتداء
  • پچھلا
  • 217 /
  • اگلا
  • آخر
  •  
  • ڈاؤنلوڈ HTML
  • ڈاؤنلوڈ Word
  • ڈاؤنلوڈ PDF
  • مشاہدے: 6890 / ڈاؤنلوڈ: 378
سائز سائز سائز
مناسك حج

مناسك حج

مؤلف:
اردو

زيادہ نہ ہوں تو اس پرحج كيلئے انہيں بيچنا واجب نہيں ہے اور وہ مستطيع نہيں ہوگي_

س ۳۶: ايك عورت حج كيلئے استطاعت ركھتى ہے ليكن اس كا شوہر اسے اسكى اجازت نہيں ديتا تو اسكى ذمہ دارى كيا ہے ؟_

ج: واجب حج ميں شوہر كى اجازت معتبر نہيں ہے ہاں اگر شوہر كى اجازت كے بغير حج پر جانے سے عورت حرج ميں مبتلا ہوتى ہو تو وہ مستطيع نہيں ہے اور اس پر حج واجب نہيں ہے_

س ۳۷: اگر شادى كے عقد كے وقت ميرے شوہر نے مجھے حج كرانے كا وعدہ ديا ہو تو كيا ميرے ذمے ميں حج مستقر ہوجائيگا؟

ج: صرف اس سے حج ذمے ميں مستقر نہيں ہوتا_

س ۳۸: كيا حج كى استطاعت حاصل كرنے كيلئے ضروريات زندگى ميں تنگى

۲۰۱

لانا جائز ہے ؟

ج: يہ جائز ہے ليكن شرعا واجب نہيں ہے البتہ يہ تب ہے جب تنگى اپنے آپ پر كرے ليكن جن اہل و عيال كا خرچ اس پر واجب ہے ان پر معمول كى حد سے تنگى كرنا جائز نہيں ہے_

س ۳۹:ماضى ميں ميرى طرف سے دين كى پابندى اور اس كا اہتمام كوئي اچھا نہيں تھا اور ميرے پاس اتنا مال تھاجو سفر حج كيلئے كافى تھا ( يعنى ميں مستطيع تھا) ليكن اپنى اس حالت كيوجہ سے ميں حج پر نہيں گيا تو اس وقت ميرے لئے كيا حكم ہے؟جبكہ اس وقت ميرے پاس لازمى رقم نہيں ہے _ جيسا كہ اسكے دو راستے ہيں ايك ادارہ حج ميں نام لكھوا كر اور ايك دوسرا راستہ كہ جس ميں زحمت زيادہ ہے تو كيا حكومت كے ہاں نام لكھوا دينا كافى ہے ؟

ج: اگر آپ ماضى ميں مستطيع تھے اور فريضہ حج كى ادائيگى

۲۰۲

كيلئے سفر پر قادر تھے اسكے باوجود آپ نے حج كو مؤخر كيا تو آپ پر حج مستقر ہوچكاہے اور آپ پر ہر جائز اور ممكن طريقے سے حج پر جانا واجب ہے البتہ جبتك عسر وحرج نہ ہو اور اگر آپ سب جہات سے مستطيع نہيں تھے تو سوال كى مفروضہ صورت ميں آپ پر حج واجب نہيں ہے_

س ۴۰: جب مسجدالحرام خون يا پيشاب كے ساتھ نجس ہوجاتى ہے تو جو لوگ اسے پاك كرنے پر مامور ہيں وہ ايسے طريقے كو استعمال كرتے ہيں جو پاك نہيں كرتا تو رطوبت ہونے يا نہ ہونے كى صورت ميں مسجد كى زمين پر نماز پڑھنے كا كيا حكم ہے ؟

ج: جبتك سجدے والى جگہ كے نجس ہونے كا علم نہ ہو نماز پڑھنے ميں كوئي حرج نہيں ہے _

س ۴۱: كيا مسجد نبوى ميں جائے نماز پر سجدہ كرنا صحيح ہے؟ بالخصوص روضہ

۲۰۳

شريفہ ميں كہ جہاں كوئي ايسى چيز ركھنا جس پر سجدہ كرنا صحيح ہے _جيسے كاغذ يادرخت كى شاخوں سے بنى ہوئي جائے نماز _توجہ كو جذب كرتاہے اور نمازى لوگوں كى نظروں كا نشانہ بنتاہے جيسے كہ اس سے مخالفين كو مذاق اڑانے كا بھى موقع ملتاہے_

ج: كسى ايسى چيز كا ركھنا كہ جس پر سجدہ صحيح ہے اگر تقيہ كے خلاف ہو تو جائز نہيں ہے اور اس پر واجب ہے كہ ايسى جگہ كا انتخاب كرے كہ جس ميں مسجد كے پتھروں پريا كسى ايسى چيز پر سجدہ كرسكے كہ جس پر سجدہ كرنا صحيح ہے البتہ اگر اس كيلئے يہ ممكن ہو ورنہ تقيةً اسى جائے نماز پر سجدہ كرے_

س ۴۲: اذان و اقامت كے وقت دو مسجدوںسے نكلنے كا كيا حكم ہے جبكہ اہل سنت برادران انكى طرف جارہے ہوتے ہيں اور اس وقت ہمارے نكلنے كے بارے ميں باتيں كررہے ہوتے ہيں ؟

ج: اگر دوسروں كى نظر ميں يہ كام نماز كو اسكے اول وقت

۲۰۴

ميں قائم كرنے كو ہلكا سمجھنا شمار ہوتاہو تو جائز نہيں ہے بالخصوص اگر اس ميں مذہب پر عيب لگتاہو_

س ۴۳: ايك شخص اپنے شہر پلٹنے كے بعد متوجہ ہوتاہے كہ عمل كے دور ان اس كا احرام نجس تھا تو كيا وہ احرام سے خارج ہے يانہيں ؟

ج: اگر وہ موضوع يعنى عمل كى حالت ميں اپنے احرام ميں نجاست كے وجود سے جاہل ہو تو وہ احرام سے خارج ہے اور اس كا طواف اور حج صحيح ہے ؟

س ۴۴: جسمكلفنے كسى كو نائب بنايا ہو كہ اسكى طرف سے قربانى كرے تو كيا نائب كے پلٹنے اور اسكے يہ خبر دينے سے پہلے كہ قربانى ہوچكى ہے اس كيلئے تقصير يا حلق كرنا جائز ہے ؟

ج: اس پر واجب ہے كہ انتظار كرے يہاں تك كہ نائب كى طرف سے قربانى ہوجانے كا انكشاف ہوجائے ليكن

۲۰۵

اگر حلق يا تقصير ميں جلدى كرے اور اتفاقاً يہ نائب كى طرف سے قربانى ہو جانے سے پہلے ہو تو اس كا عمل صحيح ہے اور اس پر اعادہ واجب نہيں ہے _

س۴۵: جس مكلف نے اپنى طرف سے قربانى كرنے كيلئے كسى كو نائب بنايا ہوا ہے كيا اس كيلئے نائب كى طرف سے اسے ذبح كرنے كى خبر پہنچنے سے پہلے سونا جائز ہے ؟

ج: اس سے كوئي مانع نہيں ہے _

س۴۶: موجودہ دور ميں منى ميں قربانى كو ذبح كرنا ممكن نہيں ہے بلكہ اس كيلئے انہوں نے منى سے باہر ليكن منى كے قريب ہى ايك جگہ معين كرركھى ہے اور دوسرى جانب سے قربانى كے جانور كہ جن كيلئے بڑى رقوم خرچ كى جاتى ہيں كہاجاتاہے كہ ان كاگوشت وہيں پھينك دياجاتاہے اور وہ گل سٹر كر ضائع ہوجاتاہے جبكہ اگر انہيں ديگر ممالك ميں ذبح كيا جائے تو ان كا

۲۰۶

گوشت ضرورت مند فقرا كو ديا جاسكتاہے تو كيا حاجى كيلئے جائز ہے كہ وہ اپنے ملك ميں قربانى كرے اور كسى كے ساتھ طے كرلے كہ وہ اسكى طرف سے قربانى كردے يا ديگر ممالك ميں اور ٹيليفون كے ذريعے قربانى كرلے يا اسے مقررہ جگہ پر ہى ذبح كرنا واجب ہے اور كيا اس مسئلہ ميں اس مرجع كى طرف رجوع كرنا جائز ہے جو اسكى اجازت ديتاہے جيسے كے بعض بزرگ فقہاء سے يہ منقول ہے ؟

ج: يہ كام جائز نہيں ہے اور قربانى صرف منى ميں ہوسكتى ہے اور اگر يہ ممكن نہ ہو توجہاں اس وقت قربانى كى جاتى ہے وہيںكى جائيگى تا كہ قربانى كے شعائر كى حفاظت كى جاسكے كيونكہ قربانى شعائر اللہ ميں سے ہے _

س ۴۷: اگر حكومت منى كے اندر قربانى كرنے پر پابندى لگادے تو كيا حجاج كيلئے مكہ مكرمہ سے باہر قربانى كرنا جائز ہے اور كيا مكہ كے اندر قربانى كرنا كافى ہے ؟

۲۰۷

ج: حج كى قربانى كافى نہيں ہے مگر منى ميں ہاں اگر اس ميں قربانى كرنے پر پابندى لگ جائے تو اس كيلئے جو جگہ تيار كى گئي ہے وہاں قربانى كرنا كافى ہے جيسے كہ اس صورت ميں مكہ كے اندر قربانى كرنا بھى كافى ہے ليكن اگر قربانى كى جگہ كا منى سے فاصلہ اتنا ہى ہو جتنا اس جگہ كا ہے جو قربانى كيلئے تيار كى گئي ہے يا اس سے كم ہو_

۴۸: ايسے خيراتى ادارے موجود ہيں جو حاجى كى نيابت ميں قربانى كرتے ہيں اور پھر اسے ضرورتمند فقرا كے حوالے كرديتے ہيں اس سلسلے ميں راہبر معظم كى رائے كيا ہے اور كيا جناب عالى كى نظر ميں اسكى شرائط ہيں ؟

ج: قربانى كى ان شرائط كا احراز كرنا ضرورى ہے كہ جو مناسك ميں ذكر ہوچكى ہيں _

س ۴۹: كيا قربانى كو ذبح كرنے كے بعد اسے ان خيراتى اداروں كو دينا

۲۰۸

جائز ہے جو اسے فقرا تك پہنچاتے ہيں ؟

ج: اس ميں كوئي حرج نہيں ہے _

س ۵۰: صفا و مروہ كے درميان سعى كرتے وقت صفا و مروہ كے پہاڑوں كے پاس لوگوں كى بڑى تعداد جمع ہوجاتى ہے جو سعى كرنے والوں كى بھيڑ كا سبب بنتى ہے تو كيا سعى كرنے والے پر واجب ہے كہ وہ ہر چكر ميں خود پہاڑ تك جائے يا سنگ مر مر سے بنى ہوئي پہلى بلندى كافى ہے كہ جو چلنے سے عاجز لوگوں كے راستے كے ختم ہونے كے ساتھ شروع ہوتى ہے ؟

ج: اس حد تك چڑھنا كافى ہے كہ جسكے ساتھ يہ صدق كرے كہ يہ پہاڑ تك پہنچاہے اور اس نے دو پہاڑوں كے درميان كے پورے فاصلے كى سعى كى ہے _

س ۵۱: كيا عمرہ مفردہ اور حج تمتع كيلئے ايك طواف النساء كافى ہے ؟

ج: عمرہ مفردہ اور حج تمتع ميں سے ہر ايك كيلئے الگ

۲۰۹

طواف النساء ہے پس ايك طواف دو طواف سے كافى نہيں ہے ہاں مُحل ہونے كيلئے ايك طواف كا كافى ہونا بعيد نہيں ہے_

س ۵۲: جو شخص بارہويں كى رات منى ميں بسر كرے اور آدھى رات كے بعد كوچ كرے تو كيا اس پر واجب ہے كہ زوال سے پہلے اسكى طرف واپس پلٹ آئے تا كہ يہ بھى وہ كو چ كرسكے جو وہاں پر موجود لوگوں كيلئے زوال كے بعد واجب ہوتاہے اور اس بات سے كوئي مانع ہے كہ وہ صبح كے وقت منى آكر جمرات كو كنكرياں مارلے پھر مكہ پلٹ جائے يا اس پر وہيں رہنا واجب ہے ؟ بالخصوص جب وہ اپنے اختيار كے ساتھ ظہر كے بعد جمرات كو كنكرياں مارنے اور مغرب سے پہلے منى سے نكلنے پر قادرہے_

ج : جو شخص منى ميں ہے اس پر واجب ہے كہ زوال كے بعد كوچ كرے اگر چہ اس طرح كے زوال كے بعد جمرات

۲۱۰

كو كنكرياں مارنے كيلئے مكہ سے آجائے اور كنكرياں مارنے كے بعد غروب سے پہلے كوچ كرجائے پس آدھى رات كے بعد مكہ جانا جائز ہے ليكن كنكرياں مارنے كيلئے بارہويں كے دن پلٹ آئيگا اور زوال كے بعد كوچ كرےگا_

س ۵۳: آيت اللہ گلپايگانى (قدس سرہ) كے اعمال حج كى كتاب ميں اعمال حج سے متعلقہ بہت سارے مستحبات مذكور ہيں _ ان مستحبات پر عمل كرنے كے سلسلے ميں جناب كى كيا رائے ہے؟

ج: قصد رجاء كے ساتھ ان پر عمل كرنے ميں كوئي حرج نہيں ہے_

س ۵۴: كيا اس آب زمزم سے وضو كرنا جائز ہے جو پينے كيلئے مخصوص ہے_

ج: مشكل ہے اور احتياط كى رعايت كرنا ضرورى ہے _

دعای عرفه

اس کتاب کے صفحہ ۲۱۹ سے ۲۴۷ تک دعا عرفہ ہے

۲۱۱

فہرست

مقدمہ: ۷

وجوب حج كے منكر اور تارك حج كا حكم ۸

حج كى اقسام: ۹

نيز حج كى تين قسميں ہيں تمتع ، افراد ، قران ۱۰

باب اول: ۱۱

حَجة الاسلام اورنيابتى حج كے بارے ميں ۱۱

فصل اول : حجة الاسلام ۱۲

حجة الاسلام كے وجوب كے شرائط ۱۳

پہلى شرط : ۱۳

دوسرى شرط: ۱۴

تيسرى شرط : ۱۵

ہر ايك كى تفصيل ۱۵

الف : مالى استطاعت : ۱۵

۱_ زاد و راحلہ ۱۶

۲_ سفر كى مدت ميں اپنے اہل و عيال كے اخراجات ۲۰

۳_ ضروريات زندگي: ۲۱

۴_ رجوع الى الكفاية: ۲۴

مالى استطاعت كے عمومى مسائل ۲۶

ب_ جسمانى استطاعت: ۲۹

۲۱۲

ج_ سربى استطاعت: ۳۰

د_زمانى استطاعت: ۳۱

دوسرى فصل :نيابتى حج ۳۲

نائب كى شرائط : ۳۵

منوب عنہ كى شرائط : ۳۷

چند مسائل : ۳۸

باب دوم : ۴۴

حج و عمرہ كے اعمال كے بارے ميں ۴۴

حج و عمرہ كى اقسام ۴۵

چند مسائل: ۴۶

حج تمتع اور عمرہ تمتع كى صورت ۴۹

حج افراد اور عمرہ مفردہ ۵۱

حج قران ۵۲

حج تمتع كے عمومى احكام : ۵۳

پہلاحصہ : ۵۶

اعمال عمرہ كے بارے ميں ۵۶

پہلى فصل :مواقيت ۵۷

مذكورہ مواقيت كے بالمقابل مقام ۶۰

چند مسائل : ۶۱

دوسرى فصل :احرام ۶۶

۲۱۳

۱_ احرام كے واجبات ۶۶

اول : نيت ۶۶

دوم : تلبيہ ۶۹

سوم : دو كپڑوں كا پہننا ۷۲

۲_ احرام كے مستحبات ۷۶

۳_ احرام كے مكروہات ۷۷

۴_ احرام كے محرمات ۷۸

محرمات احرام كے احكام : ۸۰

۱_ سلے ہوئے لباس كا پہننا ۸۰

۲_ اس چيز كا پہننا جو پاؤں كے اوپر والے پورے حصے كو چھپالے_ ۸۲

۳_ مرد كا اپنے سر اور عورت كا اپنے چہرے كو ڈھا نپنا ۸۴

۴_ مردوں كيلئے سايہ كرنا _ ۸۷

۵_ خوشبو كا استعمال: ۸۹

۶_ آئينے ميں ديكھنا: ۹۱

۷_ انگوٹھى پہننا: ۹۲

۸_ مہندى اور رنگ كا استعمال كرنا : ۹۳

۹_ بدن پر تيل لگانا : ۹۳

۱۰_ بدن كے بالوں كو زائل كرنا: ۹۴

۱۱_ سرمہ ڈالنا: ۹۶

۱۲_ ناخن تراشنا: ۹۶

۲۱۴

۱۳_ بدن سے خون نكالنا ۹۸

۱۴_ فسوق: ۹۹

۱۵_ جدال ۹۹

۱۶_ حشرات بدن كو مارنا: ۱۰۱

۱۷_ حرم كے پودوں اور درختوں كو كاٹنا: ۱۰۱

۱۸_ اسلحہ اٹھانا: ۱۰۲

۱۹_ خشكى كا شكار كرنا: ۱۰۲

۲۰_ جماع ۱۰۳

۲۱_ عقد نكاح: ۱۰۴

۲۲_ استمنائ ۱۰۵

محرمات احرام كے كفارات كے احكام ۱۰۵

مكہ مكرمہ كى طرف جانا ۱۰۶

حرم ميں داخل ہونے كى دعا ۱۰۷

مسجد الحرام ميں داخل ہونے كے مستحبات ۱۰۸

تيسرى فصل : ۱۱۰

طواف اور نماز طواف كے بارے ميں ۱۱۰

طواف: ۱۱۰

طواف كى شرائط ۱۱۱

پہلى شرط نيت ۱۱۱

دوسرى شرط : حدث اكبر اور اصغر سے پاك ہونا ۱۱۳

۲۱۵

تيسرى شرط: بدن اور لباس كا خبث سے پاك ہونا ۱۲۰

چوتھى شرط : ختنہ ۱۲۳

پانچويں شرط: شرم گاہ كو چھپانا ۱۲۳

چھٹى شرط: طواف كى حالت ميں لباس كاغصبى نہ ہو نا ۱۲۴

ساتويں شرط: موالات ۱۲۴

طواف كے واجبات ۱۲۶

اول: حجر اسود سے شروع كرنا يعنى اسكے بالمقابل جگہ سے شروع ۱۲۶

دوم: ہر چكر كو حجر اسود پر ختم كرنا : ۱۲۶

سوم: طواف بائيں جانب ہوگا اس طرح كے طواف كے دوران خانہ كعبہ حاجى كى بائيں طرف ہو اور اس سے مقصود طواف كى سمت كو معين كرنا ہے _ ۱۲۷

چہارم: حجر اسماعيل عليہ السلام كو اپنے طواف كے اندر داخل كرنا اور اسكے باہر سے طواف كرنا _ ۱۲۸

پنجم : طواف كے دوران ميں خانہ كعبہ اور اسكى ديوار كى نچلى جانب كى ۱۲۸

ہفتم : طواف كے سات چكر ہيں _ ۱۳۰

نماز طواف : ۱۳۳

چوتھى فصل :سعي ۱۳۶

سعى كے ترك كرنے اور اس ميں كمى بيشى كرنے كے بارے ميں چند مسائل ۱۳۹

پانچويں فصل: تقصير ۱۴۱

دوسرا حصہ: ۱۴۵

اعمال حج كے بارے ميں ۱۴۵

پہلى فصل :احرام ۱۴۶

۲۱۶

دوسرى فصل :عرفات ميں وقوف كرنا ۱۴۹

تيسرى فصل :مشعرالحرام ( مزدلفہ) ميں وقوف كرنا ۱۵۲

چوتھى فصل :كنكرياں مارنا ۱۵۴

كنكرياں مارنے (رمي) كى شرائط ۱۵۴

كنكريوں كى شرائط: ۱۵۶

پانچويں فصل :قربانى كرنا ۱۵۸

دوم : صحيح و سالم ہونا ۱۵۹

سوم: يہ كہ بہت دبلا نہ ہو ۱۵۹

چھٹى فصل :تقصير يا حلق ۱۶۳

ساتويں فصل : مكہ مكرمہ كے اعمال ۱۶۷

آٹھويں فصل: منى ميں رات گزارنا ۱۷۱

نويں فصل :تين جمرات كو كنكرياں مارنا ۱۷۴

متفرق مسائل : ۱۷۸

حج كا حكم كيا ہے ؟ ۱۸۱

دعای عرفه ۲۱۱

۲۱۷