مہدویت نامہ

مہدویت نامہ0%

مہدویت نامہ مؤلف:
زمرہ جات: امام مہدی(عجّل اللّہ فرجہ الشریف)

مہدویت نامہ

مؤلف: مصنفین کی جماعت
زمرہ جات:

مشاہدے: 5955
ڈاؤنلوڈ: 726

تبصرے:

مہدویت نامہ
کتاب کے اندر تلاش کریں
  • ابتداء
  • پچھلا
  • 34 /
  • اگلا
  • آخر
  •  
  • ڈاؤنلوڈ HTML
  • ڈاؤنلوڈ Word
  • ڈاؤنلوڈ PDF
  • مشاہدے: 5955 / ڈاؤنلوڈ: 726
سائز سائز سائز
مہدویت نامہ

مہدویت نامہ

مؤلف:
اردو

یہ کتاب برقی شکل میں نشرہوئی ہے اور شبکہ الامامین الحسنین (علیہما السلام) کے گروہ علمی کی نگرانی میں تنظیم ہوئی ہے

بسم اللہ الرحمن الرحیم

نام کتاب: مہدویت نامہ

مو لف: مصنفین کی جماعت

ٹائٹل: ملک مشتاق حسین

کمپوزنگ: وسیم عباس

ایڈیشن: اول

سال اشاعت: نومبر۲۰۰۹ئ

ناشر: شریکة الحسین علیہ السلام پبلی کیشنز

بِسمِ اﷲ الرَّحمٰنِ الرّحِیم

اَللَّهُمَّ کُن لِوَلِیِّکَ الحُجَّةِ بنِ الحَسَنِ

اے اﷲ تو اپنے ولی حضرت حجت ابن حسن عسکری

صَلَوَاتُکَ عَلَیهِ وَعَلٰی آبَائِهِ

(تیری صلوات ان پر اور ان کے آباءواجداد پر صبح و شام اور ہر آن ہو)

فِی هٰذِه السَّاعَةِ وَفِی کُلَِّ سٰاعَةٍ

کا اس گھڑی میں اور ہر آن میں سرپرست و نگہبان

وَلیاً وحَافِظاً وقٰائِدًا ونٰاصِراً وَدَلِی لاً وَعَیناً

حامی راہنما مددگار دیکھنے والی آنکھ اور سرپرست

حَتّٰی تُسکِنَهُ اَر ضَکَ طَو عاً وتُمتِّعَهُ فِی هٰا َطوِی لاً

بنا رہے یہاںتک کہ تو اسے اپنی زمین میں اختیار کے ساتھ سکونت عطاء فرما اور یہ کہ تو اسے اپنی زمین میںلمبی مدت تک فائدہ پہنچا

نوٹ: یہ دعاءامام زمانہ(عجل) کی سلامتی کی نیت سے روزانہ پڑھیں۔

صلوات کاملہ

یاَرَبَّ مُحَمَّدٍ وَ آلِ مُحَمَّدٍ

اے محمد وآل محمد کے ربّ جلیل

صَلِّ عَلٰی مُحَمَّدٍ وَآلِ مُحَمَّدٍ

محمد اور آل محمد پر صلوات بھیج

وَعَجِّل فَرَجَ آلِ مَحَمَّدٍ

اور آل محمد کی گشائش (حکومت کے قیام) میں جلدی فرما

نوٹ: بعض عاملین کا تجربہ ہے کہ جو شخص روزانہ اس صلوات کو ۳۱۳ مرتبہ پڑھے گا

اسے امام زمانہ عج کی زیارت نصیب ہوگی

یہ صلوات حضرت جبرائیل نے جناب یوسفعلیہ السلام کو

زندان میں تعلیم دی اور حضرت یوسف علیہ السلام

اس کا ورد کرتے تھے(مفاتیح الجنان

ابتدائیہ

بسم الله الرحمن الرحیم اللهم صل علی محمد وآل محمد وعجل فرجهم

حدیث نبوی میں آیا ہے کہ جو شخص چاہتا ہے کہ جب وہ اللہ سے ملاقات کرے تو اس کا اسلام کامل ہو تو اس پر لازم ہے کہ وہ صاحب الزمان حجت(مہدی علیہ السلام)کی معرفت حاصل کرے اور ان سے محبت و ولایت رکھے۔معروف حدیث ہے کہ جو شخص اپنے زمانہ کے امام کی معرفت نہیں رکھتا اور اسی حالت میں مرگیا تو وہ کفر اور جاہلیت کی موت مر گیا۔

اسی مضمون کی اور بہت ساری احادیث و روایات ہمارے اوپر لازم قرار دیتی ہیں کہ ہم اپنے زمانہ کے امام علیہ السلام کی معرفت حاصل کریں اوراپنے بچوں کو جہاں پر باقی اسلامی عقائد کی تعلیم دیتے ہیں وہاں پر اس زمانہ کے امام علیہ السلام کی بھی تفصیلی آگہی دیں۔کافی عرصہ سے میری یہ آرزو تھی کہ کوئی ایسی کتاب مرتب کی جائے جو حضرت امام مہدی علیہ السلام کے تعارف کا وسیلہ بنے اور تھوڑے پڑھے لکھے افراد کو بھی آسانی سے اپنے زمانہ کے امام علیہ السلام کی معرفت حاصل ہو سکے۔میری اس خواہش نے اس وقت عملی شکل اختیار کر لی جب گذشتہ سال ماہ محرم ۹۲۴۱ ھ میں جامعہ امام خمینی میں آئمہ جمعہ و جماعت کے تربیتی جلسات میں حوزہ علمیہ قم کے ہونہار طالبعلم جناب ڈاکٹر سید حسنین نقوی نے اسی عنوان پر مرتب دروس آئمہ جمعہ و جماعت کو دیئے آسان زبان میں اور بہت ہی اعلیٰ اور مطلب کو ذہن میں بٹھانے والے دروس تھے چنانچہ ہم نے ان سے خواہش کی کہ وہ ہمیں یہ دروس دے دیں تاکہ ہم ان دروس کو شائع کریں اور ان سے وسیع سطح پر فائدہ اٹھایا جائے۔اس سال رجب ۰۳۴۱ ھ ق جب میں قم زیارات پر گیا ہوا تھا تو حرم معصوم علیہ السلام میں مولانا سید حسنین نقوی صاحب سے خواہش ظاہر کی کہ وہ یہ دروس جو امام زمانہ علیہ السلام کے بارے میں مرتب شدہ ہیں ہمیں دے دیں تاکہ ہم ان سے بھرپور فائدہ اٹھائیں اور وسیع پیمانے پر ان کی اشاعت کریں بہرحال انہوں نے لطف ومہربانی کی اور امام زمانہ(عج) کے حوالے سے قم کے اندر موجود تحصیلی مرکز میں طلباءکی ایک جماعت جو اس حوالے سے کام کر رہی تھی جن میں جناب چوہدری عمران صاحب بھی سرفہرست ہیں انہوں نے ان سے اجازت لے کر یہ دروس ہمارے حوالے کئے اور اب یہ مکمل نظرثانی کے بعد اشاعت کے لئے تیار کر دیئے ہیں۔اس امید کے ساتھ کہ طلاب کرام، گریجوایٹ افراد، عوام، خواص، دینی مدارس اور تنظیمی اور تربیتی گروپس ان سے بھرپور استفادہ کریں گے ان میں بعض دروس قدرے طولانی ہیں لیکن مرتبین نے کوشش کی ہے کہ حضرت امام مہدی علیہ السلام کی زندگی ابتداءتاظہور اور بعد از ظہور کے تمام حالات کو اختصار کے ساتھ بیان کریں اور مطالب بیان کرنے میں عقائد کو ملحوظ رکھاگیاہے۔کمزور حوالوں سے گریزکیا گیا ہے اور عامیانہ نقطہ نظر کی بجائے محققانہ انداز اپنایا گیا ہے۔ پندرہ دروس کے ساتھ اس سلسلہ کو مزید مفید بنانے کے لئے ہماری طرف سے حضرت امام مہدی علیہ السلام کے بارے طلباءو طالبات کے لئے جو متفرق دروس دیے گئے یا جو مقالات تحریر کئے وہ بھی شامل کر دیے ہیں ان میں معرفت نامہ۔غیبت کبریٰ میں مومنین کی ذمہ داریاں۔ حضرت امام مہدی علیہ السلام اہل سنت کی نظر میں۔حضرت امام مہدی علیہ السلام کے متعلق چالیس احادیث۔ حضرت امام مہدی علیہ السلام کے اپنے بارے چالیس فرامین۔ حضرت امام مہدی علیہ السلام کے حوالے سے شیعہ پر نارروا اتہامات اور ان کے جوابات۔ حضرت امام مہدی علیہ السلام نہ شیعہ ہیں نہ سنی آپ علیہ السلام اہل البیت علیہ السلام سے ہیں“کو شامل کیا ہے واضح رہے اس وقت حضرت امام مہدی علیہ السلام کے حوالے سے تفصیلی مباحث کے لئے اردوزبان میں کافی ساری کتب اور تحقیقی مقالات موجود ہیں بازار میں بآسانی مل سکتے ہیں اس کے لئے ہمارے ادارے کی طرف سے بنائی گئی حضرت امام مہدی علیہ السلام کے بارے اردو میں پہلی تحقیقی اور معلوماتی ویب سائیٹ پر بھی معلومات حاصل کرنے کے لئے جاسکتے ہیں۔

اللہ تعالیٰ سے دعا ہے کہ وہ ہمیں حضرت حق امام مہدی علیہ السلام کے ظہور پرنور کے لئے مقدمات فراہم کرنے والوں سے قرار دے اور ان کے ظہور کے اسباب کو خداوندمتعال جلد مکمل کر دے، اور ان کے زمانہ کو قریب سے قریب تر کر دے۔ ان پندرہ دروس کے مرتبین نے اپنے ان اسباق کا عنوان ”انتظار کی خوشبو“قراردیاہے۔ لیکن موضوع کی وسعت کی مناسبت سے ہم نے اس کتاب کا نام ”مہدویت نامہ“ رکھا ہے اور ہر سبق کے اختتام پر امام زمانہ علیہ السلام(عج) سے متعلق احادیث بھی دی ہیںاور آخر میں شامل کی گئی دوسری بحثوں سے اس کتاب کو مفید تر بنایا گیاہے۔

محب منتظران امام مہدی علیہ السلام

سید افتخار حسین نقوی النجفی

۹۲ ذیقعدہ ۹۲۴۱ ھ