ایک سو پچاس جعلی اصحاب جلد ۱

 ایک سو پچاس جعلی اصحاب0%

 ایک سو پچاس جعلی اصحاب مؤلف:
زمرہ جات: متن تاریخ
صفحے: 416

 ایک سو پچاس جعلی اصحاب

مؤلف: علامہ سید مرتضیٰ عسکری
زمرہ جات:

صفحے: 416
مشاہدے: 26941
ڈاؤنلوڈ: 825


تبصرے:

جلد 1 جلد 2 جلد 3 جلد 4
کتاب کے اندر تلاش کریں
  • ابتداء
  • پچھلا
  • 416 /
  • اگلا
  • آخر
  •  
  • ڈاؤنلوڈ HTML
  • ڈاؤنلوڈ Word
  • ڈاؤنلوڈ PDF
  • مشاہدے: 26941 / ڈاؤنلوڈ: 825
سائز سائز سائز
 ایک سو پچاس جعلی اصحاب

ایک سو پچاس جعلی اصحاب جلد 1

مؤلف:
اردو

قعقاععثمان کے زمانے کی بغاوتوں میں :

١۔'' طبری '' ٢٩٢٨١۔٢٩٣٦و٢٩٥٠و٣٠٥٨،اور طبع مصر ٩٢٥۔٩٣و ٩٦و١٤٨۔

٢۔'' طبری '' ٢٩٥٨١۔٢٩٦٠،اور طبع مصر ١٠٥٥و١٠٦۔

٣۔'' طبری '' ٣٠٠٩١۔٣٠١٣و٣٠٨٨اور طبع مصر ١٢٦٥۔١٢٨و٢ ١٦۔

٤۔'' طبری '' ٣١٤٩١۔٣١٥٠،اور طبع مصر ١٨٨٥۔١٨٩۔

٥۔'' طبری '' ٣١٥٦١۔٣١٥٨۔

٦۔'' طبری '' ٣١٥٦١۔٣٢٢٦،اور طبع مصر ٢٠٠٥۔٢٢٣۔

٧۔''ابن اثیر ''١٧٠٣۔٢١٧و''ابن خلدون''٤٢٥٢ و''ابن کثیر'' ١٦٧٧و٢٤٦و ''روضةالصفا'' ٧٢٠٢۔

٨۔جو کچھ ہم نے طبری سے نقل کیا ہے ١٩٨١۔١٩٩میں ہے ،اور امیرالمومنین کا مکتوب ''نہج البلاغہ'' ١٢٢٣ سے نقل کیا گیا ہے ۔اس کے علاوہ '' الامامة والسیاسة'' ٦٥اور'' ابن اعثم'' ١٧٣سے۔

٩۔اس جواب کو '' العقد الفرید '' ٣١٤٤ میں خود زبیر سے نسبت دی گئی ہے ،لیکن '' زبیر ابن بکار '' نے اسے '' ابن زبیر'' سے نسبت دے دی ہے ۔''تہذیب '' ابن عساکر ٣٦٣٥،اور نہج البلاغہ ١٦٩٢۔

١٠۔ان دو خطبوں کو '' ابن اعثم'' نے ص١٧٤ میں اور شیخ مفید نے '' الجمل '' ١٥٨۔١٥٩ میں نقل کیا ہے ۔

١١۔ '' تاریخ اعثم'' ١٧٥،اورشرح نہج البلاغہ ٣٠٥١۔

١٢۔'' حاکم نیشاپوری '' نے '' المستدرک'' ٣٧١٣ میں ،'' الذہبی'' نے ''تلخیص '' میں اور ''المتقی'' نے '' کنزالعمال'' ٨٥٦میں ۔

١٣۔'' یعقوبی'' و '' مسعودی'' و '' ابن اعثم'' و '' الاغانی'' ١٢٧١٦و '' ابو مخنف'' بروایت ''شرح نہج البلاغہ '' ٤٣٠٢و٨١۔

١٤۔''طبری '' ٢٠٥٥و ''الکنز'' ٨٥٦و '' ابن اثیر'' ١٠٤٣و '' تاریخ اعثم'' و ''ابومخنف'' بروایت '' شرح نہج البلاغہ'' ٤٣١٢۔

١٥۔'' ابن اعثم'' و '' ابو الفرج'' نے ''اغانی'' ١٢٧١٦ میں اور ''یعقوبی''نے و ''شرح نہج البلاغہ'' ٨١٢و٤٣٠۔ابو مخنف کی کتاب '' الجمل'' سے کہ ہم نے اس کی عبارت درج کی ۔

١٦۔ ''شرح نہج البلاغہ'' ٨١٢اور ٨٩١۔ابو مخنف کی '' الجمل'' سے

١٧۔'' تاریخ یعقوبی'' و ''الکنز '' ٨٣٦۔٨٥و'' اغانی''اس کے علاوہ '' احادیث عائشہ'' اسی کتاب کے مولف سے ٦١۔١٨٩

١٨۔'' طبری'' طبع مصر ٢٠٤٥،'' العقد الفرید'' ٣٢٨٤،اور'' یعقوبی''

١٩۔'''' طبری'' طبع مصر ٢٢٥٥،'' ابن اثیر'' ١٠٢٣،اور'' انساب الاشراف''١٦٧١۔

۳۶۱

سند کی تحقیق:

١۔روایت یزید ''طبری ''٢٨٤٩١۔٢٩٤٢میں سنہ ٣٠۔٣٥ ہجری کے حوادث کے ضمن میں آئی ہے اور ''مرد اسدی '' ''طبری''٢٩٤٨١و''جریر'' ٣١٥٨١و٣٢١١ و''صعصعہ ''٣٢١١١و'' مخلد'' ٣٢١٢١و ''الشیخ الضبی ''٣٢١٤١ و قیس ٢٨٩١١و٣٠٣٤ میں ذکر ہوئی ہیں ۔

خاتمہ:

١۔''طبری ''٣٢١٥١ و١٩٢٠١ اور طبع مصر ٢١٨٥

عاصم بن عمرو عراق کی جنگ میں :

١۔ عاصم کے حالات ''الا ستیعاب ''،تاریخ ابن عساکر کے قلمی نسخے ،''التجرید '' ، ''الاصابہ '' میں اور ''مقر '' و ''حیرہ ''کے حوادث کی شرح معجم البلدان ،''طبری''٢٠٢٢١۔٢٠٥٨ اور ''ابن کثیر '' ٤٣٤٣٦میں ۔

''دومة الجندل ''میں :

١۔ ''طبری''٢٠٦٥١۔٢٠٦٨ اور ''الملطاط''کے بارے میں ٢١٨٥١و ٢٢٥٥و ٢٤٨٥ و ٢٩٠٨،ابن کثیر ٣٥٠٦۔

'' لسان و ملطاط''کی تشریح :

٢۔'' طبری '' ٢٤٨٥١،'' تاریخ ابن عساکر'' کے قلمی نسخے میں '' عاصم'' کے حالات ،حموی کی '' المعجم '' اور '' المشترک '' میں '' دومة الجندل '' کی روئیداد ،فتوح البلدان ٨٣،اور ابن عساکر ٤٤٨١ :

۳۶۲

عاصم وخالد کے باہمی تعاون کا خاتمہ :

٣۔'' طبری'' ٢٠٧٤١و٢٠٧٥و٢١١٥ ،اور ابن عساکر ٤٤٧١۔٤٧٠۔

مثنی کے ساتھ:

٤۔ ''طبری '' ٦٤٤۔٦٦، '' فتوح البلدان'' ٣٥٠۔٣٥١، '' تراجم الاماکن'' از حموی اور ''ابن اثیر '' ٣٣٥٢۔

جسر (پل ) کی جنگ:

٥۔'طبری '' ٦٧٤۔٧٧، '' فتوح البلدان'' ٣٥١'' اخبار الطوال'' ١١٣،اور حدیث ''حمزہ'' ''طبری '' ٢٠١٨١و٢١٩٨ میں ۔

سعد کے ساتھ:

٦۔ ''طبری '' ٨٨٤۔١٣٦،''یعقوبی '' ١٤٤٢،معجم البلدان و '' فتوح البلدان'' ٣٥٦۔٣٦٥،اور ''اخبارالطوال'' ١١٩۔١٢٦۔

٧۔ '' طبری''١١٤٤و١٧٠۔١٧٣،'' تاریخ بغداد''از خطیب ،ہاشم کے حالات کے بارے میں ١٩٦١ اور داستان فتح مدائن از فتوح البلدان ٣٦٦ اور کوفہ کی روئیداد از معجم البلدان ٣٢٣٤'' دلائل النبوة''٢٠٨٣۔٢٠٩،'' جمہرة انساب العرب''از'' ابن حزم''٣٧٨،'' ابن اثیر''٣٧٢٢۔ ٣٧٤۔٣٩٨،'' ابن کثیر''٣٧٧۔٤٧۔٦٤اور '' ابن خلدون ''٣١٥٢۔٣٢٨و٣٢٩۔

جنگ قادسیہ میں :

٨۔ '' طبری''٢١٣٤۔٢٢١،'' ابن اثیر''٤١٩٢۔٤٢٠،'' ابن کثیر''٨٣٧،'' ابن خلدون'' ٣٤١٢،''فتوح البلدان''٥٣٧،کتاب '' حموی''اور'' حمیری''میں '' جندی شاپور''کی روئیداد ورق ٢٩٧ عبارت میں تھوڑے اختلاف کے ساتھ ۔

٩۔سیف کی روایت اس سے '' جس نے فتح شوش کی روایت کی ہے'''' طبری''٢٥٢٦١ میں ۔

۳۶۳

سیستان میں :

١٠۔'' طبری''٢٢١٤،٦٥و٥٤و٦٥،'' فتوح البلدان''٥٥٣۔٥٥٦،'' حموی''سیستان کی روئیداد میں ،'' تاریخ ابن خیاط''١٤٤١،'' ابن اثیر ''٤٣٢٢۔٤٣٣،ابن کثیر٨٩٧اور '' ابن خلدون''٣٤٥٢و٣٦٠ و٣٧٣۔

عمرو بن عاصم :

١١۔ '' طبری''٥٩٥وطبع یورپ٢٨٤١١

سند کی تحقیق:

١٢۔'' الجرح والتعدیل''٤ق١٤٨١،'' میزان الاعتدال''٢٠٨٤اور لسان المیزان

١٢١٦۔

١٣۔'' الجرح والتعدیل''٤ق٣٠٢١۔

۳۶۴

اس کتاب میں مذکور شخصیتوں کے نام

(۱)

آدم

ابراہیم

ابن ابی بکر

ابن ابی عزہ قرشی

ابن ابی العوجائ

ابن ابی مکنف

ابن ابی الحدید

ابن اثیر

ابن اسحاق

ابن اعثم

ابن اعرابی

ابن بدران

ابن بدرون

ابن جوزی

ابن حجر

ابن حزم

ابن حنظلیہ

۳۶۵

ابن الحیسمان خزاعی

ابن خاضیہ

ابن خلدون

ابن خلکان

ابن خیاط

ابن دباغ

ابن درید

ابن دیصان

ابن رفیل

ابن سعد

ابن سکن

ابن شاہین

ابن شہاب زہری

ابن صعصعہ

ابن طفیل

ابن عباس

ابن عبد البر

ابن عبد ربہ

ابن عبدون

ابن عدیس

ابن عساکر

۳۶۶

ابن فتحون

ابن فرح

ابن فقیہ

ابن فتیبہ دینوری

ابن قانع

ابن کثیر

ابن کلبی

ابن ماکولا

ابن محراق

ابن مرزبان (حیرہ کے سرحد بان کابیٹا)

ابن مقفع(عبد اللہ مقفع)

ابن مندہ

ابن منظور

ابن ندیم

ابوبجید

ابوبکر (خلیفہ)

ابوبکر خطیب(خطیب بغدادی)

ابوبکر عبداللہ

ابوجعفر محمد بن حسن (شیخ طوسی)

ابوذر غفاری

ابوزکریا

۳۶۷

ابوسفیان

ابوسفیان طلحہ بن عبد الرحمن

ابوالشیخ

ابوالعباس سفاح

ابوعبد اللہ جعفر بن محمد (امام جعفر صادق ں )

ابوعبید ثقفی

ابوعبیدہ

ابو عثمان نھدی

ابوعثمان یزید

ابوعمر

ابوالفدائ

ابوالفرج (اصفہانی)

ابولیلیٰ فدکی

ابومخنف (لوط بن یحییٰ)

ابومعبد عبسی

ابومفزر تمیمی

ابوموسیٰ

ابوموسیٰ اشعری

ابو نعیم

ابونواس حسن ہانی

ابوہریرہ

ابوالیقظان (عمار)

۳۶۸

اردبیلی(مقدس اردبیلی)

احمد بن حنبل

ارسطاطالیس

ارویٰ دختر عامر

اسحق

اسحاق بن مؤید

اسماء

اسماعیل

اشعث بن قیس کندی

اعبد بن فدکی

اعیسر

اکیدر بن عبد الملک

امام علی ـ

ابو جعفر بن جریر =طبری

ام ذریح عبدیہ

ام شملہ

ام کلثوم

ام محمد

ام مطیع

ام المؤمنین

امیرالمومنین (علی بن ابیطالب ـ)

اندرزگر

۳۶۹

انسان ازلی

انوش جان

اھریمن

اھورامزدا

ایاس بن سلمیٰ

(۲)

بارتولد

بجیر

بخاری

بردسان

برزویہ

بزرگمہر

بطان بن بشر

بکر بن وائل

بکیر بن عبد اللہ

بلاذری

بلال بن ابی بلال بلقینی

بہرام

بہمن

بودا

بیرزان

۳۷۰

(ت)

ترمذی

(ث)

ثعلبہ بن کھلان

(ج)

جابان

جادویہ

جالینوس

جُخدف بن جرعب

جریر بن اشرس

جریر بن عبد اللہ بجلی

جریر بن عطیہ

جعد بن درہم

جعفر بن ابوطالب

جعفر منصور دوانیقی

جھجابن مسعود

جودی بن ربیعہ

جیمس رابسن

۳۷۱

(ح)

حارث بن ایہم

حارث بن مالک

حاکم

حجاج بن یوسف ثقفی

حجر بن عدی

حسان بن ثابت

حسن بصری

حسن بن علی

حکم بن ولید اموی

حماد بن فلان برجمی

حماد عجرد

حمال اسدی

حماد بن زید

حمزہ بن علی بن محفز

حمزہ بن یوسف

حموی

حمیر بن ابی شجار

حمیری

حنظلہ بن زیاد

حوا

حی بن یقظان

۳۷۲

(خ)

خاقان

خالد بن سعید

خالد بن عرفطہ

خالد قسری

خالد بن ملجم

خالدبن ولید

خالد بن یعمر تمیمی

خطیب بغدادی

خلف بن خلیفہ بجلی

خلیفہ بن خیاط

(د)

دار قطنی

داؤد بن علی عباسی

داہر پادشاہ ھندوستان

دعبل

(ذ)

ذو الحاجب

ذہبی

۳۷۳

(ر)

رازی

ربیع بن زیاد

ربیع بن مطر تمیمی

رستم فرخ زاد

رشاطی

رشید

رضی (سید رضی )

رفیل وابن رفیل

روزبہ

روزمھر

(ز)

زاد مھش

زبیدی

زبیر

زردشت

زفر بن حارث

زیاد بن سرجس احمری

زید بن صوحان

۳۷۴

(س)

سجاح

سعد بن ابی وقاص

سرویلیام مویر

سرٹامس آرنالڈ

سعید اموی

سعد بن عبادہ

سلمیٰ

سلمان فارسی

سلیل بن زید

سماک بن خرشہ انصاری

سمعانی

سنان بن وبر جہنی

سیاوش

سید رضی

سہل بن یوسف سلمی

سیف بن عمرتمیمی

سیوطی

۳۷۵

(ش)

شابشتی

شجرة بن اعز

شرحبیل بن حسنہ

شیخ الاسلام

شیخ طوسی

شیخ مفید

شیخ نجدی

(ص)

صعب بن عطیہ

صعصعہ مزنی

صفوان بن معطل

صفی الدین

(ض)

ضحّاک

(ط)

طبری

طلحہ

طلحہ بن اعلم

طوسی(شیخ طوسی)

۳۷۶

(ظ)

ظفر بن دھی

(ع)

عائشہ

عاصم بن عمرو تمیمی

عامر

عامربن مالک

عامر ہلالیہ نخع

عبادہ

عباس(رسول اللہصلى‌الله‌عليه‌وآله‌وسلم کے چچا)

عباس بن محمد

عبد الجبار محتسب

عبد الرحمن بُدَیل

عبد الرحمن سیاہ احمری

عبد الرحمن سمرہ

عبد الرحمن عدیس

عبد الرحمن بن ملجم

عبد العزی نمری

عبد الکریم بن ابی العوجاء

عبد اللہ بن ابی سلول

عبد اللہ بجلی

۳۷۷

عبد اللہ بدیل

عبد اللہ بن زبیر

عبد اللہ بن سبا

عبد اللہ بن سعید

عبد اللہ بن عامر بن کریز

عبد اللہ بن عباس

عبد اللہ بن علی بن ابیطالب ـ

عبد اللہ بن مسلم عکلی

عبد اللہ بن معاویہ

عبد الملک

عبد المومن

عبید اللہ بن محفز

عتبہ بن غزوان

عتبہ بن فرقد لیثی

عثمان (خلیفہ)

عثمان بن ولید

عروة بن بارقی

عروة بن زید خیل طائی

عروة بن ولید

عصمة بن حارث

عصمة بن عبد اللہ

۳۷۸

عصمة وائلی

عطیہ

عفیف بن منذر تمیمی

عقبة بن سالم

عقیلی

علاء حضرمی

علقمہ بن علاثہ کلبی

علی بن ابیطالب ـ(امیرالمومنین)

عمار یاسر

عمر بن خطاب (خلیفہ)

عمر کلواذی

عمروبن حریث

عمرو بن ریان

عمرو عاص

عمرو بن عاصم تمیمی

عمرو بن عبید

عمرو بن معدی کرب

عمیر صائدی

عنترة بن شداد

عوف بن زیاد

عیاض بن غنم

عیسیٰ ـ

۳۷۹

(غ)

غافقی

غرقدہ

غصن بن قاسم کنانی

غمربن یزید بن عبدالملک

غندجانی

(ف)

فارقلیط

فضل بن عباس

فیروزان

فیروز

فیروزآبادی

(ق)

قارن بن قریانس

قاہر عباسی

قباد(پادشاہ ساسانی)

قباد خراسانی

قحطان

۳۸۰